--> تفہیم القرآن(اکیسواں پارہ)حضرت لقمان کی اپنے بیٹےکونصیحتیں | Haqaaiq

[پاکستان]_$type=three$h=250$c=6$author=hide$comment=hide$rm=hide$date=hide$snippet=hide$show=home

تفہیم القرآن(اکیسواں پارہ)حضرت لقمان کی اپنے بیٹےکونصیحتیں

شیئر کریں:



تحریر:پروفیسر ڈاکٹر عبدالماجدندیم
جامعہ پنجاب لاہور
اكیسواں پارہ🌹اتْلُ ما اوحِیَ🌹
اكیسواں پارہ پانچ حصّوں پر مشتمل ہے، (۱) ”سورة العنكبوت“ كا بقیہ حصہ ،(۲) ”سورة الروم “مكمل، (۳) ”سورة لقمان“مكمل،(۴) ”سورة سجدة“مكمل،(۵) ”سورة احزاب“ابتدائی حصہ۔
سورة العنكبوت كی آخری ۲۵ آیات پر مشتمل ۳ ركوع، سورة الروم میں ۶۰ آیات پر مشتمل ۶ ركوع، سورة لقمان ۳۴ آیات پر مشتمل ۴ ركوع، سورة السجدة ۳۰ آیات پر مشتمل ۳ ركوع، اور سورة الأحزاب كی ابتدائی ۳۰ آیات جو كہ تین آیات زائد تین ركوع بنتے ہیں ، اكیسویں پارے میں ہیں۔
اس طرح اكیسویں پارے میں مجموعی طور پر ۱۷۹ آیات ہیں جو تین آیات زائد۱۹ ركوعوں میں ہیں ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
🌹پہلا حصہ –سورة العنكبوت ،آخری ۲۵آیات ،(۴۵- ۶۹) 🌹
سورة العنكبوت كے اس بقیہ حصے میں تین نكات نمایاں ہیں :
۱. قرآن اور نماز كی اہمیت كا بیان
۲. معاندین اور ان كی ہٹ دھرمیوں كا ذكر ۳. متقین كا تذكرہ
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
۱. وحی اور نماز كی اہمیت
اس پارے كی ابتدا ہی اسی نكتے سے ہوتی ہے كہ كتاب سے جو آپ صلی اللہ علیہ وعلی آلہ وسلم كی طرف وحی كیا جا رہا ہے اس كی تلاوت كیجیے، اور نماز كو قائم ركھیے ، یقینًا نماز بے حیائی اور برائی سے روك دیتی ہے ۔اس كے علاوہ یہ بھی بتایا گیا ہے كہ اہل ایمان كا نہ صرف قرآن پر ایمان ہوتا ہے بلكہ ان كتابوں پر بھی ایمان ہے جو پہلے نازل ہوئیں ۔اور یہ اصول بھی بیان كیا گیا كہ اللہ تبارك وتعالی جن لوگوں كو كتاب سے نوازتا ہے كتاب پر ایمان لانا ان پر ضروری ہے۔جو انكار كرتا ہے وہ كافر ہے۔ كتاب اللہ میں كمال رحمت ہے اور یادداشت ہے ایمان ركھنے والے لوگوں كے لیے۔
۲. معاندین اور ان كی ہٹ دھرمیوں كا ذكر
نبی پاك صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور آپ پر وحی كو جھٹلانے والوں كی ہٹ دھرمی واضح كرنے كے لیے بتایا كہ حضور اكرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم امی ہیں نہ پڑھنا جانتے ہیں اور نہ لكھنا جانتے ہیں ، اگر لكھنا پڑھنا جانتے ہوتے تو باطل پرست شك كرتے كہ شاید آپ نے پہلی كتابوں سے یہ علوم حاصل كر لیے ہیں ۔قرآن مجید جو واضح اور زندہ دلیل اور تمام معجزوں كا معجزہ ہے اس كیكی موجودگی میں جو لوگ اپنے من پسند معجزات كا مطالبہ كرتے ہیں وہ سوائے عناد اور جہالت كے كچھ نہیں ، ان كی اس ہٹ دھرمی كا تو یہ حال ہے كہ كئی بار وہ خود عذا ب كا مطالبہ كرنے لگتے ہیں ۔
۳. متقین كا تذكرہ
ہٹ دھرم لوگوں كا حال بیان كرنے كے بعد اللہ تبارك وتعالی نے متقین كا تذكرہ ہے اور انھیں ہجرت اور دین كی راہ میں آنے والے مصائب پر صبر كی تلقین كی ہے۔اور آخر میں واضح كر دیا ہے كہ ”جو لوگ ہمارے لیے جد وجہد كرتے ہیں ہم انھیں ضرور اپنے راستے دكھا دیتے ہں اور بے شك اللہ نیكو كاروں كے ساتھ ہے۔“
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
🌹دوسرا حصہ –سورة الروم ،مكمل، ۶۰آیات 🌹
سورة الرّوم مكی سورت ہے اس میں تین نمایاں نكات ہمارے سامنے ہیں:
۱. پیشین گوئی
۲. حق اور باطل كے درمیان قائم معركے كا بیان
۳. اللہ كی عظمت اور توحید كے دلائل
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
۱. پیشین گوئی
قرآن كریم كے معجزہ ہونے كے كئی ایك پہلو ہیں ان میں سے ایك پہلو اس كی پیشین گوئیاں بھی ہیں ، اس سورت كے شروع میں ایك پیشین گوئی ایرانیوں سے مغلوب ہونے كےبعد پھر رومیوں كے غالب آنے بارے میں تھی اور وہ بھی نو سال كے اندر ، اس پیشین گوئی كا پورا ہو جانا انتہائی غیر معمولی واقعہ تھا۔ساتھ یہ بھی بتا دیا گیا تھا كہ وہ ایسا دن ہو گا كہ مؤمنین خوش ہوں گے ، یہ مناسبت غزوہ بدر كی فتح صورت میں ظاہر ہوئی۔
۲. حق اور باطل كے درمیان قائم معركے كا بیان
سورة الروم میں اہل حق و باطل كے درمیان قائم رہنے والے ایك مسلسل معركے كے بارے میں بھی بتایا گیا ہے جو قدیم زمانہ سے جاری ہے ، اور اس وقت تك جاری رہے گا جب تك كہ فیصلے كا دن نہیں آ جاتا ۔
۳. اللہ كی عظمت اور توحید كے دلائل
توحید كے ضمن میں اللہ تعالی كی عظمت كی سات نشانیاں بیان ہوئی ہیں : (۱) اشیاء كو اضداد سے پیدا كرنا (زندہ كو مردہ سے اور مردہ كو زندہ سے)، (۲) انسان كی پیدائش مٹی سے، (۳) میاں بیوی كے درمیان ایسی محبت كہ گویا وہ ایك دوسرے كے جسم كا حصہ ہیں ، (۴) زمین و آسمان اور ان كے اندر جو كچھ بھی ہے سب كا پیدا كرنے والا وہی ہے ، اسی میں انسانوں كی مختلف زبانیں اور رنگ بھی اسی كی عظمت و قدرت كی نشانیاں ہیں ، (۵) رات اور دن كی نیند اور روزگار كی تلاش، (۶) بجلی كی چمك جو ایك طرف خوف پیدا كرتی ہے اور دوسری طرف امید بھی كہ بارش برستی ہے تو مردہ زمین زندہ ہو جاتی ہے۔، (۷) اسی طرح زمین اور آسمان كا مستحكم نظام ربّ كائنات كے وجود كی زندہ دلیل ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
🌹تیسرا حصہ –سورة لقمان ،مكمل، ۳۴آیات 🌹
سورة لقمان میں چار بنیادی نكات یہ ہیں:
۱. قرآن كی عظمت اور اس سے مستفیدین اور پھر محرومین كا بیان
۲. اللہ تعالی كی وحدانیت اور قدرت كے چار دلائل
۳. حضرت لقمان كی اپنے بیٹے كو پانچ نصیحتیں
۴. پانچ چیزوں كا علم صرف اللہ تعالی كو ہے
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
۱. قرآن كی عظمت اور اس سے مستفیدین اور پھر محرومین كا بیان
اس سورت كی ابتدابھی حروف مقطعات اور قرآن كی عظمت كےبیان سے ہوئی ہے نیز یہ بتایا گیا ہے كہ قرآن كی ہدایت و رحمت كا فیضان پانے والی ہستیاں صفت احسان سے متصف ہیں جو نماز قائم ركھتے ہیں زكوة دیتے ہیں اور آخرت پر ان كا یقین ہوتاہے ، یہی وہ لوگ ہیں جو اپنے رب كی طرف سے ہدایت پر ہیں اور یہی وہ لوگ ہیں جو كامیاب ہیں۔
دوسری طرف محروم طبقہ ہے جو اس كے بجائے فضول گفتگو كو ترجیح دیتا ہے جب كہ اس كتاب كی آیات سے متكبرانہ منہ موڑ لیتا ہے ، گویا كہ سنا ہی نہیں اور ا سكے كانوں میں كوئی ركاوٹ ہے۔
۲. اللہ تعالی كی وحدانیت اور قدرت كے چار دلائل
قرآن كی عظمت اور اس كے حوالے سے دو گروہوں كا تذكرہ كرنے كے بعد اللہ تعالی جس نے اس كتاب كو نازل كیا اس كی وحدانیت اور قدرت كے چار دلائل مذكور ہوئے ہیں ، (۱) اللہ تعالی نے آسمانوں كو بغیر كسی ایسے ستون كے بنایا ہے جو دیكھے جا سكیں ، (۲)زمین كا توازن قائم ركھنے والے مضبوط و محكم پہاڑ گاڑ ركھے ہیں ، (۳)ا ور یہاں ہر قسم كے رینگنے والے حشرات اور مویشی پھیلا ئے ہوئے ہیں ، (۴) اور آسمان كی طرف سے پانی نازل كیا ہے جو ہر قسم كی پیداوار كا سبب بنتا ہے ۔
۳. حضرت لقمان كی اپنے بیٹے كو پانچ نصیحتیں
ان مضامین كے علاوہ اس سورت كی ایك خاص بات اس شخصیت كا تذكرہ ہے جنھیں اللہ تعالی نے حكمت و دانائی سے نوازا تھا ، ان كی پانچ وصیتیں اس سورت میں آئی ہیں جو انھوں نے اپنے بیٹے كو كی تھیں ۔
(۱) شرك نہ كرنا كیونكہ شرك بہت بڑا ظلم ہے ، اس وصیت كے ضمن میں اللہ تعالی والدین كے ساتھ حسن سلوك كا حكم دیتے ہیں (۲) اللہ كے علم سے كوئی چیز مخفی نہیں ہے وہ ہر چھوٹی بڑی چیز اور عمل كو آخرت میں سامنے لے آئیں گے، (۳) اللہ كی طرف متوجہ رہنے اور انسانیت سے تعلق كے حوالے سے مختلف امور ذكر كیے ، نماز كو مكمل طریقے سے ادا كرنا ، لوگوں كو خیر كی دعوت دینا ، ہر شر سے منع كرنا اور مصائب وابتلا پر صبر كرنا۔ (۴) عاجزی اختیار كرنے اور تكبر سے بچنے كی وصیت كی (۵) اخلاق كریمہ اختیار كرنے كے لیے وصیت كی كہ چال میں میانہ روی اختیار كرو اور بولتے وقت اپنی آواز نیچی ركھو۔
۴. پانچ چیزوں كا علم صرف اللہ تعالی كو ہے
سورت كے اختتام پر توحید كے ضمن میں یہ بتایا گیا كہ پانچ چیزوں كا علم صرف اللہ تعالی كو ہے ، (۱) بارش كہاں اور كتنی برسے گی؟ (۲) قیامت كب آئے گی؟ (۳) پیٹ میں بچہ كن اوصاف كا حامل ہے ؟ (۴) موت كب اور كہاں آئے گی؟ (۵) انسان كل كیا كرے گا؟
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
🌹چوتھا حصہ –سورة السّجدة ،مكمل، ۳۰آیات 🌹
سورة السجدة بھی مكی ہے اس میں چار نمایاں نكات یہ ہیں:
۱. قرآن كی حقانیت ، عظمت اور مقصد كا بیان
۲. توحید
۳. قیامت ۴. رسالت
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
۱. قرآن كی حقانیت ، عظمت اور مقصد كا بیان
سورت كی ابتدا میں قرآن كی حقانیت اور عظمت كا بیان ہے كہ یہ ہر قسم كے شك و شبہ سے بالاتر ہے ، ربّ العالمین كی طرف سے اس كا نزول ہوا ہے اور اس كا مقصد بھی واضح كیا گیا كہ یہ متنبہ كرنے كے لیے ہے تاكہ لوگ ہدایت پا سكیں ۔
۲. توحید
آسمان و زمین كا خالق وہی ہے، ہر كام كی تدبیر وہی كرتا ہے ، پانی كے ایك حقیر قطر سے مختلف مراحل طے كرانے كے بعد انسان كو وجود بخشا پھر اسے انتہائی پر كشش صورت اور متناسب قد وقامت والا بنایا۔
۳. قیامت
مجرم اس دن سر جھكائے كھڑے ہوں گے، ان پر ذلت چھائی ہوئی ہو گی، وہ دنیا میں واپس آنے كی تمنا كریں گے، مؤمنین جو دنیا میں اللہ كے لیے اپنی راحتوں كو قربان كرتے ہیں ، اللہ نے آخرت میں ان كے لیے ایسی نعمتین تیار كر ركھی ہیں جنھیں كوئی نہیں جانتا۔
۴. رسالت
حضرت موسی علیہ السلام كو تورات دیے جانے كا ذكر ہے ۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
🌹پانچواں حصہ –سورة الأحزاب ، ابتدائی۳۰آیات 🌹
سورة الأحزاب مدنی سورت ہے ، اسكے ابتدائی حصے میں تین نكات نمایاں ہیں:
۱. امت محمدیہ علی صاحبھا الصلاة كو فلاح اور سعادت كے لیے چار امور كا حكم
۲. زمانہ جاہلیت كے بعض غلط عقائد اور عادتوں كی تردید
۳. دو غزووں كا ذكر
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
۱. امت محمدیہ علی صاحبھا الصلاة كو فلاح اور سعادت كے لیے بنیادی حكم
كہ اللہ سے ڈرتے رہیں ، وحی الہی كی اتباع كریں كافروں اور منافقوں كی آرا كی اتباع نہ كریں اور اللہ پر اعتماد اور بھروسہ ركھیں ۔
۲. زمانہ جاہلیت كے بعض غلط عقائد اور عادتوں كی تردید
(۱) ان كا خیال تھا كہ بعض لوگوں كے سینے میں دو دل ہوتے ہیں ، بتایا كہ دل تو بس ایك ہی ہوتا ہے ، یا اس میں ایمان ہو گا یا كفر۔ (۲) كلماتِ ظہار كہنے سے بیوی ہمیشہ كے لیے حرام نہیں ہوتی بلكہ كفارہ دینے سے حلال ہو جائے گی۔ (۳) منہ بولا بیٹا شرعی احكام میں حقیقی بیٹے كی طرح نہیں ہوتا۔
۳. دو غزووں كا ذكر
اس حصے میں غزوہ احزاب اور غزوہ بنی قریظہ كا ذكر ہے۔

تحریر کے بارے میں اپنی رائے بھیجیں

مقبول ترین_$type=three$author=hide$comment=hide$rm=hide$date=hide$snippet=hide$c=9$shide=home

مزید اہم تحریریں_$type=three$author=hide$comment=hide$rm=hide$date=hide$snippet=hide$c=9$shide=home

نام

پاکستان,59,تعلیم,46,ٹیکنالوجی,25,دلچسپ وعجیب,9,دنیا,19,شوبز,6,صحت,18,کاروبار,23,کالم,3,کھیل,14,ویڈیوز,43,
rtl
item
Haqaaiq: تفہیم القرآن(اکیسواں پارہ)حضرت لقمان کی اپنے بیٹےکونصیحتیں
تفہیم القرآن(اکیسواں پارہ)حضرت لقمان کی اپنے بیٹےکونصیحتیں
Understanding Al-Qur'an (Twenty-first paragraph) Five advices of Hazrat Luqman to his son
https://blogger.googleusercontent.com/img/b/R29vZ2xl/AVvXsEg04UjhrwAIF9gtPFSeeSCQL2vPEEF9YbwIjyFNM3Y52sAgi-euGnmaEFmG6OWP2brBBq8FqW_bDjUKU_8_-Jc8elXoEwkPHFLaTpj9lRppFhQmzDVU-QF3Buqf11A9YLHuj8UDOA6-AJiXPD4gopoOrSXTOLmETu4sfClVn_u80fOh0fMvPDpEp4uuiQ/s16000/book-g65bdd2dbf_1920.jpg
https://blogger.googleusercontent.com/img/b/R29vZ2xl/AVvXsEg04UjhrwAIF9gtPFSeeSCQL2vPEEF9YbwIjyFNM3Y52sAgi-euGnmaEFmG6OWP2brBBq8FqW_bDjUKU_8_-Jc8elXoEwkPHFLaTpj9lRppFhQmzDVU-QF3Buqf11A9YLHuj8UDOA6-AJiXPD4gopoOrSXTOLmETu4sfClVn_u80fOh0fMvPDpEp4uuiQ/s72-c/book-g65bdd2dbf_1920.jpg
Haqaaiq
https://www.haqaaiq.com/2023/04/Understanding-Quran-Twenty-first-parah-Five-advices-Hazrat-Luqman-his-son.html
https://www.haqaaiq.com/
https://www.haqaaiq.com/
https://www.haqaaiq.com/2023/04/Understanding-Quran-Twenty-first-parah-Five-advices-Hazrat-Luqman-his-son.html
true
913436328015187053
UTF-8
تمام تحریروں کو لوڈ کیا کوئی تحریر نہیں ملی تمام دیکھیں مزید پڑھیں جواب دیں جواب منسوخ کریں حذف کریں بذریعہ صفحۂ اول صفحات تحریریں تمام دیکھیں آپ کیلئے تجویز کردہ عنوان آرکائیو تلاش کریں تمام تحریریں آپ کی درخواست پر کوئی ملتی جلتی تحریر نہیں ملی واپس صفحۂ اول اتوار پیر منگل بدھ جمعرات جمعہ ہفتہ اتوار پیر منگل بدھ جمعرات جمعہ ہفتہ جنوری فروری مارچ اپریل مئی جون جولائی اگست ستمبر اکتوبر نومبر دسمبر جنوری فروری مارچ اپریل مئی جون جولائی اگست ستمبر اکتوبر نومبر دسمبر ابھی ابھی 1 منٹ پہلے $$1$$ منٹ پہلے 1 گھنٹہ پہلے $$1$$ گھنٹے پہلے کل $$1$$ دن پہلے $$1$$ ہفتے پہلے 5 ہفتے پہلے فالوورز فالو یہ پریمیم مواد مقفل ہے مرحلہ 1: سوشل نیٹ ورک پرشیئر کریں مرحلہ 2: اپنے سوشل نیٹ ورک کے لنک پر کلک کریں تمام کوڈ کو کاپی کریں تمام کوڈ کو منتخب کریں تمام کوڈز کو آپ کے کلپ بورڈ میں کاپی کیا گیا کوڈز / متن کو کاپی نہیں کرسکتے ہیں ، براہ کرم کاپی کرنے کے لئے [CTRL] + [C] (یا سی ایم ڈی + سی میک کے ساتھ دبائیں) متن کی فہرست